Search

Search text in whole Web and WAP site.

Text

Subscribe for Newsletter

  • Email Address  

Bayanaat - بیانات
حج میں ھونے والی غلطیاں اور انکا کفارہ Hajj Main Honay Wali Ghalatiyan Aur Unka Kaffara
عمرہ Umrah
میں مدینہ چھوڑ آیا Madina Chhor Aaya
حرمین طیبین اور طواف کے فضائل Haramain Tayyebain aur Tawaf Kay Fazail
مدینے کا تصور Madinay Ka Tasawwur
آقا کا حج Aqa Ka Hajj
حج و عمرہ کا طریقہ Hajj-o-Umra Ka Tariqa
عاشقان رسول صلی اللہ علیہ وسلم کا حج Aashiqan-e-Rasool Ka Hajj
حج کی نیتوں کا بیان Hajj Ki Niyyaton Ka Bayan
مبارک سفر Mubarak Safar
مہمان مدینہ Mehman e Madina
بیٹے کی قربانی Bety Ki Qurbani
حج کرنے والوں کے واقعات Hajj Karne Walon Kay Waqiyat
حرمین طیّبین اور طواف کے فضائل Haramain Tayyebain aur Tawaf Kay Fazail
Madani Muzakra - مدنی مذاکرہ
حج و عمرہ Hajj o Umrah
Kalaam - کلام
ارمانِ مدینہ - ایم پی تھری سی ڈی Arman-e-Madina - MP3_CD
محفل مدینہ Mehfil-e-Madina
جدھر دیکھوں مدینے کا حرم ہو Jidhar Dekhon Madinay Ka Haram Ho
مرحبا آج چلیں گے شہِ ابرار کے پاس Marhaba Aaj Chalain Gay Shah-e-Abraar Kai Paas
لبیک اللھمَّ لبیک Labbaik Allahumma Labbaik
تیرا شکریہ تاجدارِ مدینہ Tera Shukriya Taajdaar-e-Madina
حاجیوں آو شہنشاہ کا روضہ دیکھو Haajio Aao Shahanshah Ka roza dekho
یا خدا حج پہ بلا Ya Khuda Hajj pe bula
حاجیوں کے بن رہیں ہیں Hajiyon ke ban rahe hen
اب بلالیجئے نا مدینہ Ab Bula Lejeay Naa Madina
میرے آقا مدینے میں بلالو Mere aaqa Madinay main bula lo
سرکار مدینے بلالیجئے Sarkar Madinah bula lijiye
مدینے کے والی مدینے بلالو Madinay Kai Waali Madinay Bulalo
مجھ کو طیبہ بلالیجئے Mujh Ko Taiba Bula Lijiye
اے کاش پھر آجائے Aey Kash Phir Aa Jaey
مجھے در پہ پھر بلانا Mujhay Dar Pay Phir Bulana
طیبہ کانظارہ پھر Taiba Ka Nazara Phir
بلاوہ دوبارہ پھر اک بار Bulawa Dobara Phir Ik Baar Aaey
اک بار پھر مدینے عطار جارہیں ہیں Ik Baar Phir Madinay Attar Ja Rahay Hain
مجھ کو درپیش ہے پھر مبارک سفر Mujh Ko Darpesh Hai Phir Mubarak Safar
پھر اٹھا ولولہ یاد Phir Utha Walwala-e-Yaad
بلالو پھر مجھے اے شاہ بحروبر Bulalo Phir Mujhay Aey Shah-e-Bahrobar
مدینہ یاد آیا ہے Madina Yad Aaya Hay
بُلاوا دوبارہ پھر اِک بار آئے Bolawa Dobarah Phir ik bar aay
شاہِ والا مجھے طبہ بُلا لو Shah e Wala Mujhy Taiba Bolalo
مجھے مدینے کی دو اِجازت Mujhay Madinay ki do Ijazat
صبح ہوتی ہے شام ہوتی ہے Subha Hoti hay Shahm Hoti Hay
Silsilay - سلسلے
زیارتِ حرمین طیبین Ziyarat-e-Haramain Tayyibain
حج تربیتی اجتماع Hajj Tarbiyati Ijtima
مدنی گلدستے Madani Guldastay
امیر اہلسنت کی کہانی انہی کی زبانی (سفر مدینہ) Ameer-e-Ahl-e-Sunnat Ki Kahani Unhi Ki Zubani Safar-e-Madina
عاشقان رسول صلی اللہ علیہ وسلم کا حج Aashiqan e Rasool Ka Hajj
فیضان حج - دستاویز Faizan e Hajj - Documentary

حج کی اقسام

حَجّ کی قسمیں

حج کی تین قسمیں ہیں:(۱) قِران(۲) تَمتُّع (۳) اِفراد

حجِّ قِران

یہ سب سے افضل ہے۔یہ حج ادا کرنے والا ’’قارِن‘‘کہلاتا ہے ۔اس میں عمرہ اور حج کا اِحرام ایک ساتھ باندھا جاتا ہے مگرعمرہ کرنے کے بعد قارِن ’’حَلْق‘‘یا’’قَصر ‘‘ نہیں کرواسکتابلکہ بدستور اِحرام میں رہے گا۔ دسویں یا گیارہ ویں یا بارہویں ذُوالحجہ کو قربانی کرنے کے بعد ’’حَلْق‘‘یا’’قصر‘‘ کرواکے اِحرام کھول دے۔

حجِّ تَمتُّع ( ۔تَمَتْ ۔تُع )

یہ حج ادا کرنے والا’’ مُتَمَتِّع‘‘(مُ۔ تَ ۔ مَتْ ۔ تِع) کہلاتا ہے ۔ پاکستان اور ہندوستان سے آنے والے عموماً تَمَتُّع ہی کیا کرتے ہیں ۔ اس میں آسانی یہ ہے کہ اس میں عمرہ تو ہوتا ہی ہے لیکن عمرہ اداکرنے کے بعد ’’ حَلْق ‘‘ یا’’ قصْر‘‘ کرواکے اِحرام کھول دیا جاتا ہے اورپھر آٹھ ذُوالحجہ یااس سے قبل حج کا اِحرام باندھا جاتا ہے۔

حجِّ اِفراد

اِفراد کرنے والے حاجی کو’’مُفْرِد‘‘کہتے ہیں۔اس حج میں’’عمرہ‘‘شامل نہیں ہے۔ اس میں صِرْف حج کا’’اِحرام‘‘ باندھا جاتاہے۔اہلِ مکّہ اور ’’ حِلّی‘‘ یعنی مِیقات اور حُدُودِحرم کے درمیان میں رہنے والے باشِندے(مَثَلاََ اہلیانِ جدّہ شریف)’’حجِّ اِفراد‘‘کرتے ہیں۔(دوسرے مُلک سے آنے والے بھی’’ اِفراد ‘‘ کر سکتے ہیں )

حج کی اصطلاحات

اصطلاحات

حاجی صاحبان مندرجہ ذیل اصطلاحات اور اسمائے مقامات وغیرہ ذہن نشین کر لیں تو اس طرح آگے مطالعہ کرتے ہوئے ان شاء اللہ عزوجل آسانی پائیں گے ۔

اَشْھُرِ حَج

حج کے مہینے یعنی شوال المکرم و ذوالقعدہ دونوں مکمل اور ذوالحجہ کے ابتدائی دس دن ۔

اِحْرَام

جب حج یا عمرہ یا دونوں کی نیت کرکے تَلْبِیہ پڑھتے ہیں تو بعض حلال چیزیں بھی حرام ہو جاتی ہیں اس لئے اس کو " احرام " کہتے ہیں ۔ اور مجازاً اُن بِغیر سِلی چادروں کو بھی احرام کہا جاتا ہے جن کو احرام کی حالت میں استعمال کیا جاتا ہے ۔

تَلْبِیَہ

وہ وِرْد جو عمرہ اور حج کے دوران حالتِ اِحرام میں کیا جاتا ہے ۔ یعنی لَبَّیْکَ ط اَللّٰھُمَّ لَبَّیْکَ الخ پڑھنا ۔

اِضْطِباع

اِحرام کی اوپر والی چادر کو سیدھی بغل سے نکال کر اس طرح اُلٹے کندھے پر ڈالنا کہ سیدھا کندھا کُھلا رہے ۔

طواف

خانۂ کعبہ کے گرد سات چکّر یا پَھیرے لگانا ایک چکّر کو " شَوْط " کہتے ہیں ۔ جمع " اَشْواط "

مَطاف

جس جگہ میں طواف کیا جاتا ہے ۔

طَوافِ قُدُوْم

:۔ مکۂ مُعَظّمہ میں داخِل ہونے پر پہلا طواف ۔ یہ " اِفراد " یا " قِران " کی نیت سے حج کرنے والوں کے لئے سُنّتِ مُؤَکَّدَہ ہے ۔

طوافِ زِیارۃ

اِسے طوافِ افاضہ بھی کہتے ہیں ۔ یہ حج کا رُکن ہے ۔ اس کا وقت ١٠ ذوالحجّہ کی صبحِ صادِق سے بارہ (١٢) ذوالحجّہ کے غُروبِ آفتاب تک ہے مگر دس (١٠) ذوالحجّہ کو کرنا افضل ہے ۔

طوافِ وَدَاع

حج کے بعد مکّہ مکرّمہ سے رُخصت ہوتے ہوئے کیا جاتا ہے ۔ یہ ہر " آفاقی " حاجی پر واجِب ہے ۔

طوافِ عُمرہ

یہ عُمرہ کرنے والوں پر فرض ہے ۔

رَمل

طواف کے ابتِدائی تین پَھیروں میں اکڑ کر شانے ہلاتے ہوئے چھوٹے چھوٹے قدم اٹھاتے ہوئے قدرے تیزی سے چلنا ۔

اِسْتِلام

حَجَرِ اَسْوَد کو بوسہ دینا یا ہاتھ یا لکڑی سے چھُو کر ہاتھ یا لکڑی کو چُوم لینا یا ہاتھوں سے اس کی طرف اشارہ کرکے انہیں چُوم لینا ۔

سَعْی

صَفا اور مَرْوَہ کے مابَین سات پھیرے لگانا ( صَفا سے مَرْوَہ تک ایک پَھیرا ہوتا ہے یوں مَرْوَہ پر سات چکّر پورے ہوں گے)

رَمْی

جَمرات ( یعنی شیطانوں ) پر کنکریاں مارنا ۔

حَلَق

اِحْرام سے باہَر ہونے کے لئے حُدُودِ حرم ہی میں پُورا سَر مُنڈوانا ۔

قَصْر

چوتھائی (٤/١) سر کا ہر بال کم ازکم اُنگلی کے ایک پَورے کے برابر کَتَروانا ۔

مَسجدُ الْحرام

وہ مسجِد جس مین کعبہ مُشَرَّفہ واقِع ہے ۔

بابُ السَّلام

مسجِدُ الْحرام کا وہ دروازۂ مبارَکہ جس سے پہلی بار داخِل ہونا افضل ہے اور یہ جانِبِ مشرِق واقِع ہے ۔

کَعْبَہ

اِسے بَیْتُ اللہ بھی کہتے ہیں یعنی اللہ عزوجل کا گھر ۔ یہ پوری دنیا کے وَسْط میں واقع ہے اور ساری دُنیا کے لوگ اِسی کی طرف رُخ کرکے نماز ادا کرتے ہیں اور مُسلمان پروانہ وار اس کا طواف کرتے ہیں۔

احرام

احرام باندھنے کا طریقہ

(١) ناخن تراشیں (٢) بغل اور ناف کے نیچے کے بال دور کریں بلکہ پیچھے کے بال بھی صاف کریں ۔ (٣) مسواک کریں ۔ (٤) وضو کریں ۔ (٥) خوب اچھی طرح مَل کر غُسل کریں ۔ (٦) جسم اور احرام کی چادروں پر خوشبو لگائیں کہ یہ سنّت ہے ۔ ہاں ایسی خوشبو ( مثلاً خشک عَنبر ) نہ لگائیں جس کا جِرْم ( یعنی تہ ) کپڑوں پر جَم جائے ۔

اسلامی بھائیوں کا احرام :۔

اسلامی بھائی سِلے ہوئے کپڑے اُتار کر ایک نئی یا دُھلی ہوئی سفید چادر اوڑھیں اور ایسی ہی چادر کا تہبند باندھیں ( تہبند کے لئے لَٹھّا اور اوڑھنے کے لئے تولیہ ہو تو سُہُولت رہتی ہے ۔ ( تہبند کا کپڑا موٹا لیں تاکہ بدن کی رنگت نہ چمکے اور تولیہ بھی بڑی سائز کا لیں )۔

اسلامی بہنوں کا احرام :۔

اسلامی بہنیں حسبِ معمول سِلے ہوئے کپڑے پہنیں ، دستانے اور موزے پہن سکتی ہیں ۔ وہ سر بھی ڈھانپیں ۔ مگر چہرے پر چادر نہیں اوڑھ سکتیں ، غیر مردوں سے چہرہ چھپانے کے لئے ہاتھ کا پنکھا یا کوئی کتاب وغیرہ سے ضَرورتاً آڑ کر لیں ۔

احرام کے نفل :۔

اگر مکروہ وقت نہ ہو تو دو (٢) رکعت نماز نفل بہ نیّت اِحرام ( مرد بھی سر ڈھانپ کر ) پڑھیں بہتر یہ ہے کہ پہلی رکعت میں الحمد شریف کے بعد قُلْ یٰۤاَیُّہَا الْکٰفِرُوۡنَ ۙ اور دوسری رکعت میں قُلْ ھُوَ اللہ شریف پڑھیں ۔

احرام

Watch - Download
احرام باندھنے کا طریقہ

Watch - Download

نیت و لبیک



مَدَنی پھول

نیّت دل کے ارادے کوکہتے ہیں ،زَبان سے بھی کہہ لیں تواچّھاہے ،عَرَبی میں نیّت اُسی وَقت کارآمدہوگی جبکہ ان کے معنیٰ سمجھ آتے ہوں ورنہ اُردو میں کرلیجئے ،ہرحال میں دل میں نیّت ہوناشرط ہے۔

نیت

Watch - Download
لبیک

Watch - Download

٨ ذوالحجہ، منیٰ کو روانگی

آٹھ ذُوالحجۃ الحرام،مِنیٰ کو روانگی

١ ) مِنٰی،عَرَفات ،مُزْدَلِفہ وغیرہ کا سفراگر ہو سکے تو پیدل ہی طے کریں کہ جب تک مکّہ شریف پلٹیں گے ہر ہر قدم پر سات سات کروڑنیکیاں ملیں گی۔ وَاللّٰہُ ذُوالْْفَضْلِ الْعَظِیْم

٢ ) راستے بھر لَبَّیْکَاور ذِکر و دُرُودکی خوب کثرت کیجئے۔جوں ہی مِنیٰ شریف نظر آئے دُرود شریف پڑھ کر یہ دعا پڑھئے:

منی

Watch - Download
منی کی دعا

Watch - Download

٩ ذوالحجہ ، عرفات کو روانگی

نوذُوالحجۃ الحرام عرفات کو روانگی

نوذُوالحجہ کونمازِ فجر مُسْتَحَب وقت میں ادا کرکے لَبَّیْک اور ذکر و دعا میں مشغول رہیے ۔ یہاں تک کہ آفتاب کوہِ ثبیر پر کہ مسجِدِ خیف کے سامنے ہے چمکے اب دھڑکتے ہوئے دل کے ساتھ جانبِ عرفات شریف چلئے۔ نیز مِنٰی شریف سے نکل کر ایک بار یہ دعا بھی پڑھ لیجئے۔

عرفات کے معاملات

عَرَفات شریف

عَرَفات شریف میں وقتِ ظہر میں ظہر و عصر ملا کر پڑھی جاتی ہے مگر اس کی بعض شرائط ہیں ۔ آپ اپنے اپنے خیموں میں ظہر کے وقت میں ظہر اور عصر کے وقت میں عصر کی نماز با جماعت ادا کیجئے۔

عَرَفات شریف کی دعائیں
عرفات کی دعا

Watch - Download

٩ ذوالحجہ ، مغرب کے بعد مزدلفہ روانگی

مُزْدَلِفَہ کو روانگی

جب غروبِ آفتاب کا یقین ہو جائے تو عَرَفات شریف سے جانبِ مُزْدَلِفَہ شریف چلیے، راستے بھر ذِکر و درود اور لَبَّیْک کی تکرار رکھیے ۔کل میدانِ عَرَفات شریف میں حُقُوق اللّٰہ معاف ہوئے یہاںحُقُوقُُ العِباد مُعاف فرمانے کا وعدہ ہے۔

مغرب وعشاء ملا کر پڑھنے کا طریقہ

ہاں آپ کو ایک ہی اذان اور ایک ہی اِقامت سے دونوں نمازیں ادا کرنی ہیں لہٰذا اذان واِقامت کے بعد پہلے مغرب کے تین فرض ادا کر لیجئے ،سلام پھیرتے ہی فوراََ عشا ء کے فرض پڑھئے ،پھر مغرب کی سُنَّتیں،اس کے بعد عشاء کی سُنَّتیں اور وتر ادا کیجیے ۔

وُقُوفِ مُزْدَ لِفہ

مُزْدَ لِفہ میں رات گزارنا سنَّتِِ مؤَکَّدہ ہے مگر اس کا وُقُوف واجب ہے۔وُقُوفِ مُزْدَ لِفہ کا وقت صبحِ صادق سے لے کر طلوعِ آفتاب تک ہے اس کے درمیان اگر ایک لمحہ بھی مُزْدَ لِفہ میں گزار لیا تو وقوف ہو گیا،ظاہر ہے کہ جس نے فجر کے وقت کے اندر مُزْدَلِفہ میں نماز فجر ادا کی اس کا وقوف صحیح ہو گیا ۔

کنکریاں چن لیجئے

آج کی رات بعض اکابر علماء رحمہم اللہ کے نزدیک لیلۃ القدر سے بھی افض ہے ۔ یہ رات غفلت یا خوش گپیّوں میں ضائع کرنا سخت محرومی ہے ، ہو سکے تو ساری رات لَبَّیک اور ذکر و درود میں گزاریئے ۔ رات ہی میں وقت نکال کر شیطان کو مارنے کے لیئے انچاس (٤٩ ) کنکریاں کھجور کی گٹھلی کے برابر چن لیجئے بلکہ کچھ زیادہ لے لیجئے تاکہ وار خالی جانے وغیرہ کی صورت میں کام آسکیں ۔ کنکریاں بڑےپتھر کو توڑ کر نہ بنائیں ۔ نیز ان کو تین بار پانی سے دھو لینا افضل ہے ۔

١٠ ذوالحجہ ، کا پہلا عمل

دسویں ذُوالحجہ کا پہلا کام رَمی

مُزْدَ لِفہ شریف سے مِنیٰ شریف پہنچ کر سیدھے جَمْرَۃُ الْعَقَبَہ یعنی ’’بڑے شیطان‘‘ کی طرف آئیے۔آج صِرْف اسی ایک(یعنی بڑے شیطان) کو کنکریاں مارنی ہیں۔

رمی کا طریقہ

Watch - Download

١٠ ذوالحجہ ، بڑے شیطان کو رمی کے بعد قربانی پھر حَلْق

حج کی قربانی

دسویں ذُوالحجہ کو بڑے شیطان کو کنکریا ں مارنے کے بعدقربان گاہ تشریف لائیے اور قربانی کیجئے ۔یہ قربانی حج کے شکرانے میں قارِن اور مُتَمَتِّع پر واجب ہے چاہے وہ فقیر ہی کیوں نہ ہوں ۔خمُفْرِد کے لیے یہ قربانی مستحب ہے،چاہے وہ غنی(یعنی مالدار) ہوخ قربانی سے فارغ ہو کرحَلْق یا قَصر کروا لیجئے خیاد رہے حاجی کو ان تین اُمور میں ترتیب قائم رکھنا واجب ہے۔
(۱) سب سے پہلے ’’ رَمی ‘‘ (۲) اس کے بعد’’ قربانی ‘‘ (۳) پھر ’’ حَلْق یا قَصْر ‘‘
مُفْرِد پر قربانی واجب نہیں لہٰذا یہ رَمی کے بعد حَلْق یا قَصْر کروا سکتا ہے ۔

حلق و تقصیر کے ١٧ مدنی پھول

Watch - Download

۱۱ ذوالحجہ ، ۱۲ ذوالحجہ ، رمی تینوں شیطانوں کو

گیارہ اور بارہ ذُوالحِجَّۃ کی رَمی

گیارہ (١١ ) اور بارہ (١٢ ) ذُوالْحجہ کو ظُہر کے بعدتینوں شیطانوں کو کنکریاں مارنی ہیں۔پہلے جَمْرَۃُالْاُولٰی (یعنی چھوٹا شیطان) پھر جَمْرَۃُ الْوُسْطٰی (یعنی مَنجھلا شیطان) اور آ خِرمیں جَمْرَۃُ الْعَقَبَہ (یعنی بڑا شیطان )۔

١٠ ذوالحجہ یا ۱۱ ذوالحجہ ، ۱۲ ذوالحجہ ،کو طواف الزیارۃ

طوافِ زیارت
طوافِ ز یارت حج کا دوسرا رکن ہے ۔

طوافِ زیارت دسویں ذُوالحجہ کو کر لینا افضل ہے ۔اگر یہ طواف دسویں کو نہیں کرسکے تو گیارہویں اور بارہویں کو بھی کر سکتے ہیں مگربارہویں کا سورج غروب ہونے سے پہلے پہلے لازِماً کرلیجئے۔
طوافِ زیارت کے چار پھیرے کرنے سے پہلے بارہویں کا سورج غروب ہو گیا تو دم واجب ہو جائے گا ۔
ہاں اگرعورت کوحیض یانفاس آگیااوربارہویں کے بعد پاک ہوئی تواب کرلے اس وجہ سے تاخیر ہونے پر اس پردَم واجِب نہیں۔
حائِضہ کی نِشَست محفوظ ہو اور طوافِ زیارت کا مسئلہ ہو تو ممکِنہ صورت میں نِشَست مَنسُوخ کروائے اور بعدِ طہارت طَوافِ زِیارت کرے۔ اگر نِشَست مَنسُوخ کروانے میں اپنی یا ہمسفروں کی دُشواری ہو تو مجبوری کی صورت میں طَوافِ زِیارت کرلے مگر بَدَنہ یعنی گائے یا اُونٹ کی قربانی لازِم آئے گی اور توبہ کرنا بھی ضَروری ہے کیونکہ جَنابَت کی حالت میں مسجِد میں داخِل ہونا گُناہ ہے۔ اگر بارہویں کے غُروبِ آفتاب تک طہارت کر کے طَوافُ الزِّیارۃ کا اِعادہ کرنے میں کامیابی ہوگئی تو کَفّارہ ساقِط ہوگیا اور بارہویں کے بعد اگر پاک ہونے کے بعد موقع مِل گیا اور اِعادہ کرلیا تو بَدَنہ ساقِط ہوگیا مگر دَم دینا ہوگا۔

طواف الزیارۃ کے ١٢ مدنی پھول

Watch - Download

سعی

صفا و مروہ کی سعی

سعی میں اِضْطباع یعنی کندھا کُھلا رکھنا سُنّت نہیں ہے ۔ اب سعی کے لئے حَجَرِ اَسود کا پہلے ہی کی طرح دونوں ہاتھوں تک اٹھا کر یہ دعا
پڑھ کر استلام کیجئے۔
اب بابُ الصَّفا پر آئیے ۔ کوہِ صَفا چونکہ مسجِد حرام سے باہر واقع ہے اور ہمیشہ مسجد سے باہر نکلتے وقت اٌلٹا پاؤں نکالنا سنّت ہے لہذا یہاں بھی پہلے اُلٹا پاؤں نکالئے کہ سنّت ہے اور حسبِ معمول مسجِد سے باہر آنے کی دعا پڑھئے ۔ دعا یہ ہے

اب درود و سلام پڑھتے ہوئے صَفا پر اتنا چڑھیئے کہ کعبۂ معظَّمہ نظر آجائے اور یہ بات یہاں معمولی سا چڑھنے پر حاصل ہو جاتی ہے ۔ عوام النّاس کی طرح زیادہ اوپر تک نہ چڑھیں کہ یہ خلافِ سُنّت ہے اب یہ دُعا پڑھیئے


صفا سے اب ذِکْر و دُرُود میں مشغول درمیانہ چال چلتے ہوئے جانِبِ مَرْوَہ چلئے۔ جُوں ہی پہلا سبز میل آئے مَرد دوڑنا شروع کر دیں ۔( مگر مُہَذَّب طریقے پر ، نہ کہ بے تحاشہ) اور سوار سواری کو تیز کر دیں ۔ ہاں اگر بِھیڑ زیادہ ہو ، تو تھوڑا رُک جائیں جب کہ بھیڑ کم ہونے کی امّید ہو۔دوڑنے میں یہ یاد رکھیئے کہ کہ خود کو یا کسی دوسرے کو ایذا نہ پہنچے کہ یہاں دوڑنا سُنۃت ہے جب کہ کسی مسلمان کو ایذا دینا حرام ۔ اسلامی بہنیں نہ دوڑیں ۔ اب اسلامی بھائی دوڑتے ہوئے اور اسلامی بہنیں چلتے ہوئے یہ دُعا پڑھیں :۔

جب دوسرا سبز میل آئے تو آہِستہ ہو جائیں ۔ اور جانبِ مَروَہ بڑھے چلیں ۔ اور معمولی اونچائی پر چڑھیں بلکہ ( جہاں سے شروع ہوتے ہیں ) اس کے قریب زمین پر کھڑے ہونے سے بھی مَرَوہ پر چڑھنا ہوگیا ۔ Check Marble
یہاں اگر چہ عمارات بن جانے کی سبب کعبہ شریف نظر نہیں آتا مگر کعبۂ مُشَرَّفہ کی طرف منہ کر کے صفا کی طرح اتنی ہی دیر تک دعا مانگیں ۔ یہ ایک پھیرا ہوا ۔
اب حسبِ سابق دُعا پڑھتے ہوئے مَرْوَہ سے جانِبِ صفا چلئے اور حسبِ معمول مِیْلِینِ اخضَرَیْن کے درمیان مَرد دوڑتے ہوئے اور اسلامی بہنیں چلتے ہوئے وُہی دُعا پڑھیں ۔ اب صَفا پر پہنچ کر دو (٢) پھیرے پورے ہوئے ۔ اسی طرح صَفا اور مَرْوَہ کے درمیان چلتے ، دوڑتے ساتواں پھیرا مَرْوَہ پر ختم ہوگا ۔ آپ کی سعی مکمل ہوئی ۔

نماز سعی سنت ہے

اب ہوسکے تو مسجد حرام میں دو (٢) رکعت نمازِ نَفْل ( اگر مکروہ وقت نہ ہو ) ادا کرلیں کہ مستحب ہے ۔ ہمارے پیارے آقا صلی اللہ علیہ واٰلہ وسلم نے سَعْی کے بعد مطاف کے کِنارے حَجَرِ اسود کی سیدھ میں دو (٢) نَفْل ادا فرمائے ہیں۔

مُتَمَتِّع کیلئے ہدایت

مُفرد و قارِن تو حج کے رَمل و سَعْی سے طوافِ قُدوم میں فارغ ہو چکے مگر مْتَمَتِّع نے جو طواف و سَعْی کئے وہ عُمرہ کے تھے اور اس لئے " طوافِ قُدوم " سُنت نہیں ہے کہ اس میں فراغت پالے ۔ لہذا اگر " مَتَمَتِّع " بھی پہلے سے فارِغ ہونا چاہے تو جب حج کا اِحرام باندھے اُس وقت ایک نِفٰل طواف میں رَمل و سعی کر لے اب اُسے بھی طوافُ الزِّیارۃ میں ان اُمُور کی حاجت نہ رہے گی ۔

طواف رخصت

طوافِ رُخصت

جب رُخصت کا ارادہ ہواس وقت ’’آفاقی حاجی ‘‘پر طوافِ رخصت واجب ہے۔ نہ کرنے والے پر دم واجب ہوتا ہے۔( میقات سے باہر(مثلاًپاک وہندوغیرہ)سے آنے والاآفاقی حاجی کہلاتا ہے )

Namaz Timing - اوقات الصلوۃ
اوقات نماز براۓ مکہ و مدینہ Auqat e Namaz Bara-e-Makkah Aur Madina
اوقات الصلوۃ سافٹ ویئر (ڈیکسٹاپ) (Auqat us Salat Software (Desktop
اوقات الصلوۃ سافٹ ویئر (آئی فون) (Auqat us Salat Software (iPhone
اوقات الصلوۃ سافٹ ویئر (اینڈ رائیڈ) (Auqat us Salat Software (Android
اوقات الصلوۃ سافٹ ویئر (جے ٹو ایم ای) (Auqat us Salat Software (J2ME
اوقات الصلوۃ سافٹ ویئر (ٹچ اسکرین) (Auqat us Salat Software (Touch Screen
Mobile Package - موبائل پيکج
تلاوت ، ويڈيو کلام (ٹوٹل 46 عدد) Tilawat, Video Kalam - total 46 file
آڈيو کلام(ٹوٹل 112 عدد) Audio Kalam - total 112 file
سلسلہ، امیر اہلسنت کی کہانی انہی کی زبانی(ٹوٹل 13 عدد) Silsila, Ameer e AhleSunnat Ki Kahani Inhi Ki Zubani - total 13 file
 
YES

Copyrights 2018 Dawateislami.net